Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

زمین پر ناجائز قبضہ

زمین پر ناجائز قبضہ

(۱)’’ عَنْ سَالِمٍ عَنْ أَبِیہِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ مَنْ أَخَذَ مِنَ الْأَرْضِ شَیْئًا بِغَیْرِ حَقِّہِ خُسِفَ بِہِ یَوْمَ الْقِیَامَۃِ إِلَی سَبْعِ أَرْضِیْنَ‘‘۔ (1)
حضرت سالم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ اپنے باپ سے روایت کرتے ہیں کہ رسولِ کریم عَلَیْہِ الصَّلَاۃُ وَ التَّسْلِیْم نے فرمایا کہ جو شخص دوسرے کی زمین کا کچھ حصہ ناحق دبالے تو اسے قیامت کے دن سات زمینوں کی (تہ) تک دھنسایا جائے گا۔ (بخاری شریف)
(۲)’’ عَنْ سَعِیدِ بْنِ زَیْدٍ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ مَنْ أَخَذَ شِبْرًا مِنَ الْأَرْضِ ظُلْمًا فَإِنَّہُ یُطَوَّقُہُ یَوْمَ الْقِیَامَۃِ مِنْ سَبْعِ أَرْضِیْنَ‘‘۔ (2)
حضرت سعید بن زید رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ حضور عَلَیْہِ الصَّلَاۃُ وَالسَّلَام نے فرمایا کہ جو شخص کسی کی بالشت بھر زمین ظلم سے حاصل کرے گا اسے قیامت کے دن سات زمینوں کا طوق پہنایا جائے گا۔ (مسلم، بخاری)
(۳)’’ عَنْ أَبِیْ حُرَّۃَ الرَّقَاشِیّ عَنْ عمِّہِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ اَلا لَا تَظْلِمُوْا اَلا لَا یَحِلُّ مَالُ اِمْرَیئٍ اِلَّا بِطِیْبِ نَفْسٍ مِنْہُ‘‘۔ (3)
حضرت ابوحرہ رقاشی رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ اپنے چچا سے روایت کرتے ہیں کہ انہوں نے کہا کہ حضور علیہ الصلاۃ والسلام نے فرمایاکہ خبردار!(کسی پر)ظلم نہ کرنا (اور) کان کھول کر سن لو کہ کسی شخص کا مال(تمہارے لیے ) حلال نہیں ہوسکتا مگر وہ خوشی دل سے راضی ہوجائے ۔ (بیہقی)
٭…٭…٭…٭

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!