Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

نماز کے فرائض کتنے ہیں

نماز کے فرائض کتنے ہیں

سات چیزیں نماز میں فرض ہیں :
{۱} تکبیر تحریمہ (1 ) : یعنی پہلی اَللّٰہُ اَکْبَر جس سے نماز شروع ہوتی ہے۔
{۲} قیام: یعنی اتنی دیر کھڑا رہنا جتنی دیر میں فرض قرأ ت (2 ) ادا ہو۔

{۳} قرأت: یعنی کم سے کم ایک آیت پڑھنا۔
{۴} رکوع: یعنی اتنا جھکنا کہ ہاتھ بڑھائے تو گھٹنے تک پہنچ جائیں ۔
{۵} سجود: یعنی ماتھے کا زمین پر جمنا اس طرح کہ کم سے کم پاؤں کی ایک انگلی کا پیٹ زمین سے لگا ( 1) ہو۔
{۶} قعدہ اخیرہ: یعنی نماز کی رکعتیں پوری کرنے کے بعد اتنی دیر بیٹھنا کہ پوری اَلتَّحیات رَسُوْلہ تک پڑھی جاسکے۔
{۷} خروج بِصُنْعِہٖ: یعنی قعدئہ اخیرہ کے بعد اپنے ارادہ و عمل سے نماز ختم کردینا، خواہ سلام و کلام سے ہو یا کسی دوسرے عمل سے۔

________________________________
1 – تکبیر تحریمہ میں خاص لفظ اللّٰہ اکبر فرض نہیں، فرض تو اتنا ہے کہ خالص تعظیم الٰہی کے الفاظ ہوں مثلا: اَللّٰہُ اَعْظَم، اَللّٰہُ الْکَبِیْر،اَلرَّحْمٰن اَکْبَر کہا جب بھی فرض ادا ہوگیامگر یہ تبدیلی مکروہ تحریمی ہے۔ (۱۲منہ)
2 – قرأ ت سے مراد قرآن شریف پڑھنا۔ ۱۲ (منہ)

________________________________
1 – لہٰذا اگر اس طرح سجدہ کیا کہ دونوں پاؤں زمین سے اُٹھے رہے یا صرف انگلی کی نوک زمین سے لگی تو نماز نہ ہوگی۔ (درمختار، فتاویٰ رضویہ، بہارشریعت) (۱۲منہ) ۔ ( بہارشریعت،حصہ۳، ۱/۵۱۳)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!