حفاظت زبان اور تنہائی وغیرہ

حفاظت زبان اور تنہائی وغیرہ

Advertisement

(۱)’’عَنْ عَبْدِ اللَّہِ بْنِ عَمْرٍو قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ مَنْ صَمَتَ نَجَا‘‘۔ ()
حضرت عبداللہ بن عمرو رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ حضور علیہ الصلاۃ والسلام نے فرمایا کہ جو شخص خاموش رہا اس نے نجات پائی ۔ (ترمذی)
(۲)’’ عَنْ أَبِی ذَرٍّ قَالَ سَمِعْتُ رَسُوْلَ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ یَقُوْلُ اَلْوَحْدَۃُ خَیْرٌ مِّنْ جَلِیْسِ السُّوْئِ وَالْجَلِیْسُ الصَّالِحُ خَیْرٌ مِّنَ الْوَحْدَۃِوَاِمْلَائُ الْخَیْرِ خَیْرٌ مِّنَ السّکُوْتِ وَالسُّکُوْتُ خَیْرٌ مِّنْ اِمْلَائِ الشَّرِّ‘‘۔ ()
حضرت ابوذر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ میں نے حضور علیہ الصلاۃ والسلام کو فرماتے ہوئے سنا کہ تنہائی برے ہمنشین سے بہتر ہے اور اچھا ہمنشین بہتر ہے تنہائی سے اور بھلائی کا سکھانا بہتر ہے خاموشی سے ۔ اور خاموشی بہتر ہے برائی کی تعلیم سے ۔ (بیہقی، مشکوۃ)
(۳)’’ عَنِ ابْنِ مَسْعُودٍ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ سِبَابُ الْمُسْلِمِ فُسُوقٌ‘‘۔ ()
حضرت ابن مسعود رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ حضور علیہ الصلاۃ والسلام نے فرمایا کہ مسلمان کو گالی دینا فسق و گناہ ہے ۔ (بخاری، مسلم)
(۴)’’ عَنْ أَنَسٍ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ إِذَا مُدِحَ الْفَاسِقُ غَضَبَ الْعَرْشُ‘‘۔ ()
حضرت انس رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ حضور علیہ الصلاۃ والسلام نے فرمایا کہ جب فاسق کی تعریف کی جاتی الرَّبُّ وَاھْتَزَّ لَہُ
ہے تو اللہ تعالیٰ غضب فرماتا ہے اور فاسق کی تعریف سے عرشِ الہٰی کانپ اٹھتا ہے ۔ (بیہقی)
جب فاسق کی مدح و تعریف کرنے سے عرشِ الہٰی کانپنے لگتا ہے تو بد دین ، بدمذہب کی تعر یف کرنے سے عرش الٰہی کس قدر کانپتا ہوگا۔ ( العیاذ باللہ تعالی)
٭…٭…٭…٭

________________________________
1 – ’’سنن الترمذی‘‘، کتاب صفۃ القیامۃ والرقائق إلخ، الحدیث: ۲۵۰۹، ج۴، ص۲۲۵.
2 – ’’شعب الإیمان‘‘ للبیہقی، فصل فی فضل السکوت عن کل إلخ، الحدیث: ۴۹۹۳، ج۴، ص۲۵۶، ’’مشکاۃ المصابیح‘‘، کتاب الأداب، باب حفظ اللسان إلخ، الحدیث: ۴۸۶۴، ج۲، ص۱۹۷.
3 – ’’صحیح البخاری‘‘ ، کتاب الإیمان، باب خوف المؤمن إلخ، الحدیث: ۴۸، ج۱، ص۳۰، ’’صحیح مسلم‘‘، کتاب الإیمان، باب ن بیان قول النبی إلخ، الحدیث: ۱۱۶۔ (۶۴) ص۵۲.
4 – ’’شعب الإیمان‘‘ للبیہقی، باب فی حفظ اللسان، إذا مدح إلخ، الحدیث: ۴۸۸۶، ج۴، ص۲۳۰.

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!