Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

دَجال کی صفت اور اس کے کرتب

دَجال کا نکلنا

دَجال کی صفت اور اس کے کرتب

دجال کا نا ہوگا اس کی ایک آنکھ ہوگی اور خدائی کا دعویٰ کرے گا، اس کے ماتھے پر ’’ ک ف ر ‘‘ لکھا ہوگا، یعنی کافر جس کو ہر مسلمان پڑھے گا اور کافر کو دکھائی نہ دے گا، یہ بہت تیزی سے سیر کرے گا، چالیس دن میں حرمین شریفین ( 1) کے سوا تمام رُوئے زمین کا گشت کرے گا، (2 ) اس چالیس دن میں پہلا دن سال بھر کے برابر ہوگا اور دوسرا دن مہینہ بھر کے برابر ہوگا اور تیسرا دن ہفتہ کے برابر اور باقی دن چوبیس چوبیس گھنٹے کے ہوں گے اس کا فتنہ بہت سخت ہوگا، ایک باغ اورایک آگ اس کے ساتھ ہوگی جس کا نام جنت دوزخ رکھے گا جہاں جائے گا اُن کو ساتھ لیے ہوگا، اس کی جنت دراصل آگ ہوگی اور اسکا جہنم آرام کی جگہ ہوگی۔لوگوں سے کہے گا کہ ہم کو خدا مانو جو اُسے خدا کہے گا اُسے اپنی جنت میں ڈالے گا اور جو انکار کرے گا اُسے اپنے جہنم میں پھینک دے گا، مردے جِلائے گا، پانی برسائے گا، زمین کو حکم دے گا وہ سبزے اُگائے گی۔ ویرانے میں جائے گا تو وہاں کے دفینے شہد کی مکھیوں کی طرح دَل کے دَل اس کے ساتھ ہوجائیں گے، اس قسم کے بہت سے شعبدے دکھائے گا اور حقیقت میں یہ سب جادو کے کرشمے ہوں گے واقع میں کچھ نہ ہوگا اسی لیے اس کے وہاں سے جاتے ہی لوگوں کے پاس کچھ نہ رہے گا، جب حرمین شریفین میں جانا چاہے گا فرشتے اس کا منہ پھیر دیں گے، دَجال کے ساتھ یہودیوں کی فوج ہوگی۔

________________________________
1 – حرمین شریفین مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کو کہتے ہیں۔ (۱۲منہ)
2 – یعنی ساری زمین پر پھرے گا۔۱۲ (منہ)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!