Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

آئینہ منفعل ترے جلوے کے سامنے

آئینہ منفعل ترے جلوے کے سامنے ساجد ہیں مہ ومہر ترے تلوے کے سامنے
جاری ہے حکم یہ کہ دوپارہ قمر ہوا انگشت مصطفی کے اشارے کے سامنے
کیوں دربدر فقیر تمہارا کرے سوال جب تم ہوبھیک مانگنے والے کے سامنے
جنت تو کھینچتی ہے کہ میری طرف چلو ایمان لے چلا ہے مدینے کے سامنے
اہل نظر نے غور سے دیکھا تو یہ کھلا کعبہ جھکا ہوا ہے مدینے کے سامنے
یہ وہ کریم ہیں کہ جو مانگو وہی ملے اے سائلو چلو تو دعا لے کے سامنے
رب کریم یہ ہے دعا میری روز محشر شرمندہ میں نہ ہوں ترے پیارے کے سامنے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!