Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

تہجد

 تہجد

فرضِ عشاء پڑھنے کے بعدکچھ دیر سو رہے پھر شب میں  طلوعِ صبح سے پہلے
جس وقت آنکھ کھلے اگر چہ رات کے نو بجے، یا جاڑوں  میں  پونے سات بجے عشاء  پڑھ کر سو رہے اور سات سواسات بجے آنکھ کھلے وہی وقت تہجد کا ہے ،وضو کر کے کم از کم دو رکعت پڑھ لے تہجد ہو گیا اور سنت آٹھ رکعت ہیں۔(1)اور معمولِ مشائخ 12 رکعت، قرأت کااختیار ہے جو چاہے پڑھے ، اور بہتر یہ کہ جتنا قرآنِ مجید یاد ہو اس کی تلاوت ان رکعتوں  میں  کرے، اگر کل یاد ہو تو کم سے کم تین رات زیادہ سے زیاد ہ چالیس رات میں  ختم کرے، نہ یاد ہو تو ہر رکعت میں  تین تین بار سورۂ اخلاص کہ جتنی رکعتیں  پڑھے گا اتنے ختمِ قرآنِ مجیدکاثواب ملے گا۔ 
مـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــدینـــہ
1…     ردا   لمحتا ر،کتاب    الصلا   ۃ، باب ا لوتر والنوافل، مطلب فی صلاۃ ا  للیل، ج۲،ص۵۶۶۔۵۶۷
error: Content is protected !!