تلاوت سن کر فضول باتوں کے دلدادہ اٹھ گئے

تلاوت سن کر فضول باتوں کے دلدادہ اٹھ گئے

Advertisement

حضرت ِسیِّدُناعبید بن ابوجَعْدرحمۃُ اللّٰہ تعالٰی علیہ ایک اَشْجَعی شخص سے روایت کرتے ہیں کہ لوگوں کو پتا چلا کہ حضرت ِسیِّدُناسلمان فارسی رضی اللّٰہ تعالٰی عنہمدائن کی ایک مسجد میں ہیں تو وہ ان کے پاس جمع ہونے لگے ، یہاں تک کہ ہزار کے لگ بھگ افراد وہاں جمع ہوگئے ۔آپ رضی اللّٰہ تعالٰی عنہ نے کھڑے ہو کر فرمایا : بیٹھو ! بیٹھو ! جب سب لوگ بیٹھ گئے تو آپ رضی اللّٰہ تعالٰی عنہ نے سورۂ یوسف کی تلاوت شروع کر دی ، آہستہ آہستہ لوگ وہاں سے نکلنے لگے ، یہاں تک کہ 100کے قریب افراد باقی رہ گئے ، آپ رضی اللّٰہ تعالٰی عنہ نے جلال میں آکرفرمایا : تم نے من گھڑت باتیں سننا چاہیں ، لیکن میں نے تمہیں اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ کا کلام سنایا توتم اُٹھ کرچل دئیے ۔ (حلیۃ الاولیاء ، ۱/ ۲۶۱ ، رقم : ۶۴۳)
صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب ! صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!