Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

اللہ عزوجل کی خفیہ تد بیر

اللہ عزوجل کی خفیہ تد بیر

حضرت سیدنا عدی بن حاتم رضی اللہ تعالیٰ عنہ بیان کر تے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا ،”قیامت کے دن لوگوں میں سے کچھ لوگوں کو جنت کی طرف جانے کا حکم دیا جائیگا جب وہ لوگ جنت کے قریب پہنچ جائیں گے اور اس کی خوشبوؤں کو سونگھ لیں گے اور ا س کے محلات اور جنتیوں کے لئے تیارہ کردہ نعمتوں کو دیکھ لیں گے تو ندا آئے گی ،” ان کو جنت سے ہٹادو، انکا جنت میں کوئی حصہ نہیں ہے۔ ” وہ وہاں سے اتنی حسرت سے لوٹیں گے کہ پہلے ایسی حسرت سے کو ئی نہیں لوٹا تھا ۔وہ کہیں گے،” اے ہمارے رب عزوجل ! اگر تو ہمیں جنت دکھانے اور اپنے ثواب دکھانے ،اور اپنے دوستوں کے لئے تیار کردہ نعمتیں دکھانے سے پہلے ہی دوزخ میں داخل کر دیتا تو یہ ہمارے لئے بہت آسان ہو تا۔”

اللہ تعالیٰ ارشاد فرمائے گا ، ”میں نے تمہارے ساتھ یہی ارادہ کیا تھا ،جب تم خلوت میں ہو تے تھے تو میرے سامنے بڑے بڑے گناہ کر تے تھے اور جب تم لوگوں سے ملتے تو انتہائی تقویٰ اور پرہیز گاری کے ساتھ ملتے تھے ،تم لوگوں کو اس کے خلاف دکھاتے جو تمہارے دلوں میں میرے لئے خیال تھا ،تم لوگوں سے ڈرتےتھے اور مجھ سے نہیں ڈرتے تھے ،تم نے لوگوں کی خاطر (برے کام ) ترک کئے اور میری خاطر نہیں کئے ، آج میں تم کو ثواب سے محروم کر نے کے ساتھ ساتھ درد ناک عذاب چکھاؤں گا ۔” (مجمع الزوائد ،کتاب الزھد،ج ۱۰ص۳۷۷،رقم۱۷۶۴۹)

error: Content is protected !!