کون کہاں مرے گا

    جنگ ِبدر میں لڑائی سے پہلے ہی حضورِ اقدس صلی اﷲ تعالیٰ علیہ وسلم صحابہ کو لے کر میدان جنگ میں تشریف لے گئے اور اپنی چھڑی سے لکیر کھینچ کھینچ کربتایا کہ یہ فلاں کافر کی قتل گاہ ہے۔ یہ ابوجہل کا مقتل ہے۔ اس جگہ قریش کافلاں سردار مارا جائے گا۔ صحابہ کرام رضی اللہ تعالیٰ عنہم کابیان ہے کہ ہر سردار قریش کے قتل ہونے کے لیے آپ نے جو جو جگہیں مقرر فرما دی تھیں اسی جگہ اس کافر کی لاش خاک و خون میں لتھڑی ہوئی پائی گئی۔(1)(مسلم جلد ۲ ص ۱۰۲ باب غزوہ بدر)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *