(۲)۔۔۔۔۔۔شیخ احمد رفاعی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ:

(۲)۔۔۔۔۔۔شیخ احمد رفاعی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ:

Advertisement
    جب حضرت سیدناشیخ عبدالقادرجیلانی رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ نے قَدَمِیْ ھٰذِہٖ عَلٰی
رَقَبَۃِ کُلِّ وَلِیِ اللہِ فرمایا تو شیخ احمد رفاعی رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ نے اپنی گردن کو جھکا کر عرض کیا: ”عَلٰی رَقَبَتِیْ یعنی میری گردن پر بھی آپ کاقدم ہے۔” حاضرین نے عرض کیا : ”حضور والا! آپ یہ کیا فرما رہے ہیں ؟”تو آپ نے ارشاد فرمایا کہ” اس وقت بغداد میں حضرت شیخ عبدالقادر جیلانی قدس سرہ النورانی نے قَدَمِیْ ھٰذَہٖ عَلٰی رَقَبَۃِ کُلِّ وَلِیِ اللہِ کا اعلان فرمایا ہے اور میں نے گردن جھکا کر تعمیل ارشاد کی ہے۔”
 (بہجۃالاسرار،ذکرمن حناراسہ من المشایخ عندماقال ذلک،ص۳۳)
سروں پرلیتے ہيں جسے تاج والے
تمہاراقدم ہے وہ یاغوث اعظم
Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!