(۳)دریاؤں پر تصرف

(۳)دریاؤں پر تصرف

دریا کا پھٹ جانا،دریاکاخشک ہوجانا، دریا پر چلنا بہت سے اولیاء کرام سے
ان کرامتوں کا ظہور ہوا،بالخصوص سید المتأخرین حضرت تقی الدین بن دقیق العید
رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ کے لئے تو ان کرامتوں کا باربار ظہورعام طور پر مشہور خلائق ہے۔(3) (حجۃ اللہ ج۲،ص۸۵۶)

 

(۳)دریاؤں پر تصرف

دریا کا پھٹ جانا،دریاکاخشک ہوجانا، دریا پر چلنا بہت سے اولیاء کرام سے
ان کرامتوں کا ظہور ہوا،بالخصوص سید المتأخرین حضرت تقی الدین بن دقیق العید
رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ کے لئے تو ان کرامتوں کا باربار ظہورعام طور پر مشہور خلائق ہے۔(3) (حجۃ اللہ ج۲،ص۸۵۶)

 

(۳)دریاؤں پر تصرف

دریا کا پھٹ جانا،دریاکاخشک ہوجانا، دریا پر چلنا بہت سے اولیاء کرام سے
ان کرامتوں کا ظہور ہوا،بالخصوص سید المتأخرین حضرت تقی الدین بن دقیق العید
رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ کے لئے تو ان کرامتوں کا باربار ظہورعام طور پر مشہور خلائق ہے۔(3) (حجۃ اللہ ج۲،ص۸۵۶)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *