نمازوں کا بہترین وقت

نمازوں کا بہترین وقت

سوال: نمازوں کے اوقات میں مختلف المسلک لوگوں نے بہت اختلاف کیا ہے مگر کیا نمازوں کے بہترین وقت کے لیے کوئی اصول بھی موجود ہے یا نہیں؟
جواب: یقینا اس غرض کے اصول موجود ہیں۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد گرامی ہے: 
(( اذا صلی العبد فی اول الوقت صعدت الی السماء ولھا نور حتی تنتھی الی العرش تستغفر لصاحبھا الی یوم القیمة وتقول حفظک اللہ کما حفظتنی واذا صلی العبد فی غیر وقتھا صعدت الی السماء لانور لھا فتنتھی الی السماء فتلف کما یلف الثوب او الخرقة فیضرب بھا وجھہ ثم تقول ضیعک اللہ کما ضیعتنی )) ( غنیة الطالبین صفحہ841 ) یعنی جب کوئی شخص اول وقت میں نماز ادا کرتا ہے تو وہ آسمان پر پہنچ کر نورانی بن جاتی ہے اور پھر عرش تک رسائی حاصل کرتی ہے۔ ایسی نماز اپنے پڑھنے والے کے حق میں روز قیامت تک بخشش طلب کرتی رہتی ہے۔ اے نمازی! خدا تیری حفاظت کرے جس طرح تو نے میری حفاظت کی۔
لیکن جب کوئی شخص نماز کا اول وقت گزار کر نماز ادا کرتا ہے تو ایسی نماز آسمان پر بھی بے نور رہتی ہے اور پھر یہ عرش کی طرف بھی نہیں جاتی بلکہ آسمان سے پھٹے پرانے اور گندے کپڑے کی طرح لپیٹ کر نمازی کے منہ پر مار دی جاتی ہے۔ پھر یہ نماز اپنے نمازی سے کہتی ہے خدا تجھے برباد کرے جس طرح تو نے مجھے برباد کیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *