Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

تحفہ قبول نہ کیا

تحفہ قبول نہ کیا

حضرتِ سیِّدُنا ابراہیم بن اَدْہم رحمۃُ اللّٰہ تعالٰی علیہ سے کسی شخص نے عرض کی : اے ابو اسحاق ! میں چاہتاہوں کہ آپ مجھ سے تحفے میں یہ جُبَّہ قبول فرمالیں ۔آپ رحمۃُ اللّٰہ تعالٰی علیہنے ارشاد فرمایا : اگر تم غنی ہو تو میں رکھ لیتا ہوں اور اگر تم فقیر ہو تو میں معذرت خواہ ہوں ۔اس شخص نے کہا : میں غنی ہوں ۔آپ رحمۃُ اللّٰہ تعالٰی علیہنے استفسار فرمایا : تمہارے پاس کتنا مال ہے ؟عرض کی : دو ہزار دینار ۔پوچھا : اگر تمہارے پاس چار ہزار دینارہوجائیں تو خوشی ہوگی ؟ اس نے کہا : جی ہاں ! کیوں نہیں ۔یہ سن کرحضرتِ سیِّدُنا ابراہیم بن اَدْہم رحمۃُ اللّٰہ تعالٰی علیہنے فرمایا : پھر تو تم فقیر ہوئے ، اور تحفہ قبول کرنے سے انکار کردیا ۔(عیون الاخبار ، جزء۲ ، ۱/۳۹۰)

error: Content is protected !!