ابتدائی باتیں

علم صرف کی تعریف:
  ایسے اصول و ضوابط جن کے ذریعہ ایک کلمہ سے دوسرا کلمہ بنانے اور اس میں تبدیلی کرنے کاطریقہ معلوم ہو۔
موضوع:
   علم صرف کا موضوع صیغہ(۱)کے اعتبارسے”کلمہ ”ہے ۔
غرض و غایت:
  صیغوں کوبنانے اوران میں تبدیلی کرنے میں ذہن کو غلطی سے بچانا۔
وجہ تسمیہ:
  علم صرف کو”صرف”کہنے کی وجہ یہ ہے کہ اس کا لغوی معنی”پھیرنا”ہے، اور اس علم میں چونکہ ایک کلمہ کو پھیر کر اس کی مختلف صورتیں بنانے کے طریقے بیان کیے جاتے ہیں اس لیے اس علم کو ”علم صرف”کہتے ہیں ۔
                        سوالات
 سوال نمبر۱:علم صرف کی تعریف بیان کیجیے۔
 سوال نمبر۲: علم صرف کا موضوع اورغرض وغایت بیان فرمائیں۔
 سوال نمبر۳:علم صرف کو صرف کیوں کہتے ہیں؟
(۱)……صیغہ کلمہ کی اس شکل کو کہتے جو حروف اور حرکات و سکنات کی مخصوص ترتیب سے حاصل ہوتی ہے۔ مثلاً ضَرَبَ