حضرت بی بی اُمّ عُبَیْس رضی ﷲ تعالیٰ عنہا

حضرت بی بی نہدیہ رضی اﷲ تعالیٰ عنہا کی طرح یہ بھی لونڈی تھیں اور ان کو بھی کافروں نے بہت ستایا بے حد ظلم و ستم کیا لوہا گرم کر کے ان کے بدن کے نازک حصوں پر داغ لگایا کرتے تھے کبھی پانی میں اس قدر ڈبکیاں دیا کرتے تھے کہ ان کا دم گھٹنے لگتا تھا مار پیٹ کا تو پوچھنا ہی کیا وہ تو ان کافروں کا روزانہ ہی کا محبوب مشغلہ تھا آخر پیارے رسول مصطفٰے صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلّم کے یار غار صدیق جاں نثار رضی اﷲ تعالیٰ عنہ نے اپنا خزانہ خالی کر کے ان مظلوموں کو خرید خرید کر آزاد کر دیا تو ان مصیبت کے ماروں کو کچھ آرام ملا۔
   (الاصابۃ فی تمییزالصحابۃ، رقم۱۲۱۶۳،اُمّ عبیس،ج۸،ص۴۳۴)