نعت شاعر حشمت رضا ساحل سیونڈیہہ

رفعت ذات  پیمبر لکھ یہی تو نعت ہے
بعد خالق سب سے برتر  لکھ یہی تو نعت ہے
ہم گنہگاروں کی خاطر سرور دینا و دیں
پیٹ پر باندھے ہیں پتھر  لکھ یہی تو نعت ہے
چاند کیسے ہو گیا آدھا ادھر آدھا ادھر
مصطفیٰ کا حکم پا کر لکھ یہی تو نعت ہے
زلف ختم المرسلیں اللیل ہے رب کی قسم
الضحیٰ روئے منور لکھ یہی تو نعت ہے
جن کو خالق نے بنایا مالک دوجہاں
تھی چٹائی ان کا بستر  لکھ یہی تو نعت ہے
مصطفیٰ کے چار جانب کون تھے ہجرت کی شب
حضرت صدیق اکبر لکھ یہی تو نعت ہے
چاند، سورج اور ستاروں سے ملاتے ہیں نظر
رات دن طیبہ کے کنکر لکھ یہی تو نعت ہے
حشمت رضا ساحل سیونڈیہہ